ه‍.ش. ۱۳۸۶ اسفند ۵, یکشنبه

پی پی پی:سب کی طرف سے بلوچوں سےمعافی



پی پی پی:سب کی طرف سے بلوچوں سےمعافی

پاکستان پیپلز پارٹی کی بلوچستان کی پارلیمانی پارٹی نےصوبے میں فوجی کارروائی روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔
پارٹی کے اسلام آباد میں ہونے والے اجلاس میں کئی قراردادیں منظور ہوئیں جن میں صوبے میں فوجی کارروائی روکنے کے مطالبے کے علاوہ، اختر مینگل سمیت تمام سیاسی رہنماؤں کی رہائی اور پولیس کی بجائے لیویز کی تعیناتی کا مطالبہ کیا گیا اور انیس سو تہترکےآئین کی بحالی کےلیےکام کرنےکااعادہ کیاگیا۔
بلوچستان: احتجاج، سینکڑوں گرفتار
’بلوچستان میں عام معافی دی جائے‘
بلوچستان کا سیاسی حل زیر غور ہے
بلوچستان اسمبلی فوج پر برہم
پارٹی کی صدارت شریک چیئرپرسن آصف علی زرداری نے کی۔ اجلاس میں نائب صدور مخدوم امین فہیم اور سید یوسف رضا گیلانی، سیکرٹری جنرل جہانگیر بدر اور پی پی پی پارلیمنٹیرین کے جنرل سیکرٹری راجہ پرویز اشرف بھی موجود تھے۔ اجلاس میں پارٹی کی مرحوم سربراہ بینظیر بٹھو کے لیے دعا بھی کی گئی۔
قراردادوں میں پیپلز پارٹی نے پاکستانی عوام کی طرف سے بلوچوں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں اور ناانصافیوں کی معافی مانگتے ہوئے باہمی عزت و احترام اور حسنِ سلوک کا نیا باب شروع کرنے کا وعدہ کیا۔
قراردادوں کے مطابق پیپلز پارٹی بلوچستان سن انیسن سو تہتر کے آئین کے اندر رہتے ہوئے زیادہ سے زیادہ صوبائی خود مختاری دینے کے لیے کام کرے گی۔

هیچ نظری موجود نیست: